اسد عمر کو شوگر ملز مالکان نے کیا دھمکی دی تھی؟ تہلکہ خیز انکشافات


اسلام آباد (ویب ڈیسک) حکومت چینی بحران پر وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) کی تحقیقاتی رپورٹ کا فرانزک کرنے والے کمیشن کی حتمی رپورٹ منظر عام پر لے آئی ہے جس کے تحت جہانگیر ترین، مونس الٰہی، شہباز شریف اور ان کے اہل خانہ، اومنی گروپ اور خسرو بختیار کے بھائی عمرشہریار کی چینی ملز نے پیسے بنائے۔اب وزیراعظم کو جمع کرائے گئے اس کمیشن کی رپورٹ کی

مزید تفصیلات سامنے آئی ہیں اور انکشاف ہوا ہے کہ وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے کمیشن کو بتایا کہ شوگر ملز مالکان نے انہیں دھمکی دی تھی کہ اگر چینی برآمد کرنے کی اجازت نہ دی گئی تو کرشنگ سیزن شروع نہیں کریں گے۔روزنامہ جنگ کے مطابق وفاقی وزیر اسد عمر کمیشن میں پیش ہوئے اور بتایا کہ شوگر ملز مالکان نے چینی کی برآمد کی اجازت نہ دینے پر دھکمی دی،شوگر ملز نے دھمکی دی کہ اجازت نہ دینے پر کرشنگ سیزن شروع نہیں کریں گے۔کمیشن کے مطابق اسد عمر نے چینی برآمد کرنے کے فیصلے کو درست بھی قرار دیا اور کہا کہ اس وقت

ملک میں چینی کا وافر ذخیرہ موجود تھا، چینی کی برآمد کے وقت ملک کو فارن ایکسچینج کی اشد ضرورت تھی، چینی کی برآمد کے فیصلے کے وقت کرشنگ سیزن شروع ہونے والا تھا، برآمد کے فیصلے کے وقت چینی کی قلت کا خدشہ نہیں تھا۔کمیشن رپورٹ کے مطابق اسد عمر نے کمیشن کو بتایا کہ چینی کی قیمتوں میں اضافے کو برآمد کے باعث قلت سے منسلک نہ کیا جائے،چینی کے ذخیرے کے اعدادوشمار صوبےدیتے ہیں، مستند نہ ہونے کا شبہ نہیں،18ویں ترمیم کے بعد سبسڈی کا معاملہ صوبوں کے پاس ہے،چینی کی ایکسپورٹ پر سبسڈی کا مینڈیٹ وفاقی حکومت کا نہیں، چینی کی قیمتوں میں اضافہ کارٹیلائزیشن سے ہوا۔کمیشن رپورٹ کے مطابق کمیشن نے سبسڈی کو صوبائی معاملہ قرار دینے کے اسد عمر کے بیان پر عدم اطمینان کا اظہار

کیا۔کمیشن نے اپنی رپورٹ میں مزید لکھا کہ وزیراعظم عمران خان کے میشر تجارت مشیر عبد الرزاق داو¿د بھی چینی کمیشن میں پیش ہوئے۔رزاق داو¿د نے کمیشن کو بتایا کہ ملک میں چینی کا ذخیرہ موجود تھا، فارن ایکسچینج کی ضرورت تھی، چین نے درآمدی فہرست میں چینی کو بھی شامل کیا تھا، چینی برآمد کی ایک وجہ چین کو درآمدی فہرست میں شامل کرنا بھی تھا،ملک میں سال بھر کسی موقع پر بھی چینی کی قلت نہیں رہی۔کمیشن کی رپورٹ کے مطابق رزاق دائود نے کمیشن کو مزید بتایا کہ چینی کی قیمتوں میں اضافے کو برآمد اور قلت سے جوڑنے کا جواز نہیں بنتا،شوگر ایڈوائزی بورڈ اور بین الوزارتی کمیٹی کے شرکاءایک ہی ہیں، شوگر ایڈوائزی بورڈ چینی کے معاملے پر بحث کا فورم ہے۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


تازہ ترین خبریں
19
پی ٹی آئی نے بلوچستان حکومت سے علیحدگی پر غور شروع کر دیا
18
وزیر اعظم ہاؤس بلا کر عمران خان مجھے کیا کہتے رہے؟ بشیر میمن کے تہلکہ خیز انکشافات
17
بجلی سستی کیے جانے کا امکان
16
نواز شریف کے 3 قریبی ساتھی کس اعلیٰ شخصیت سے ملے؟ بڑی خبر
15
عید کے بعد کیا کرنا ہے؟ حکمت عملی تیار
14
الطاف حسین نے آخری وقت میں ہندو مذہب کیوں اختیار کیا

تازہ ترین ویڈیو
23
امت مسلمہ کے ہیرو صلاح الدین ایوبی کے قول کے پیچھے چھپی سچی کہانی
27 2
یہ وہ جھوٹ ہے جوہر لڑکی ضرور بولتی ہے
2
کرونا وبا کب اور کیسے ختم ہو گی ؟ 1400 سال پہلے حضور اکرم ﷺ کی نشاندہی ، جان کر آپ پھولے نہ سمائیں گے
4 7
جھگڑالو بیوی نعمت خدا وندی مگر کیسے
3 9
کیسے لڑکیوں کو خواب دکھا کر تباہ کیا جاتا ہے ایک سچا واقعہ
52394
الطاف حسین نے آخری وقت میں ہندو مذہب کیوں اختیار کیا،کرونا سے ڈر کر یا ہندووں کی محبت میں

دلچسپ و عجیب
11
دفنانے کیلئے کئی بار قبر کھودی گئی مگر اندر ایک کالاسانپ نکلا
15 7
وہ سربراہ جسے دفنانے کیلئے کئی بار قبر کھودی گئی مگر اندر ایک کالاسانپ نکلا
9 1
کرونا وائرس کی وبا کے دوران میاں بیوی ازدواجی تعلقات قائم رکھ سکتے ہیں ؟
20 8
دریا ’’نیل‘‘ کے نیچے زیر زمین کونسا دریا بہتا ہے
Copyright © 2017 insafnews.pk All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Discaminer | Contact Us