عمران خان ہر بحران کے بعد پہلے سےزیادہ مضبوط ہوکر کیوں نکلتے ہیں؟ معید پیرا زادہ ن


اسلام آباد( نیوز ڈیسک) سینئر اینکر پرسن معید پیر زادہ کا کہنا ہے کہ ہر بحران ، ہر کرائسز کے بعد وزیراعظم عمران خان پہلے سے زیادہ مستحکم اور مضبوط ہوکر نکلتے ہیں۔حالانکہ متحدہ اپوزیشن بار بار یہ کہتی ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی تو کوئی اتھارٹی بچی ہی نہیں ہے۔ پاکستان کےمیڈیا کا بڑا حصہ ، لکھنے لکھانے والے، جو انگریزی اخبارات کے ادارئیے لکھنے والے ہیں۔اپنے ویڈیو لاگ میں معید پیرزادہ کا کہنا تھا کہ میرے اس تجزئیے کے بعد شاید آپکو نظر آنے لگ

جائے کہ ہر بحران ، ہر کرائسز کے بعد وزیراعظم عمران خان پہلے سے زیادہ مستحکم اور مضبوط ہوکر نکلتے ہیں۔حالانکہ متحدہ اپوزیشن بار بار یہ کہتی ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی تو کوئی اتھارٹی بچی ہی نہیں ہے۔ پاکستان کے میڈیا کا بڑا حصہ ، لکھنے لکھانے والے، جو انگریزی اخبارات کے ادارئیے لکھنے والے ہیں، انکے حساب سے تو وزیراعظم عمران خان کی مورل اتھارٹی کب کی ختم ہوچکی ہے، آخری دموں میں ہے۔۔معید پیرزادہ نے مزید کہا کہ اس وقت کرونا وائرس جیسا بحران ہے جس میں وزیراعظم عمران خان پہلے سے زیادہ Stable اور مضبوط نظر آرہے ہیں۔ اسکی کیا وجہ ہے یہ میں آپکو بتانا چاہتا ہوں۔معید پیرزادہ کے مطابق دنیا بھر

میں اگر کامیاب لیڈرز، کاروباری شخصیات کا تجزیہ کیا جائے تو اس میں کچھ ایسی کوالٹیز نظر آتی ہیں جو انہیں کامیاب بناتی ہیں۔اس موقع پر معید پیرزادہ نے وہ 9 کوالٹیز بتائیں جو ہر کامیاب شخص میں موجود ہوتی ہیں اور وزیراعظم عمران خان میں بھی یہ کوالٹیز موجود ہیں۔کامیاب لیڈر وہ ہے جس کے پاس ویژن ہے اور مقصد ہے۔ اسکے پاس ویژن ہے اور اسے احساس ہے کہ وہ بہت بڑی چیز کرنا چاہتا ہے، اسکے اندر ایک موٹیویشن ہے کہ میں نے اس چیز کو اچیو کرنا ہے۔دوسری کوالٹی یہ ہے کہ اسکے اندر اس طرح کی ایمانداری اور دیانت ہے کہ وہ اسکی شخصیت کے اندر سے چھلکتی ہے، نظر آتی ہے۔تیسری کوالٹی یہ ہے کہ اس کے اندر خوداعتمادی ایسی ہے کہ وہ اپنے فالورز کو انسپائر کرتا ہے۔چوتھی کوالٹی اسکے اندر اپنے کاز کیلئے بہت کمٹمنٹ پائی جاتی ہے۔پانچویں کوالٹی اسکے اندر کمیونیکیشن سکل ہے کہ وہ اپنے آئیڈیا اور اپنے ویژن کو لوگوں تک لے جاسکتا ہے۔وہ اپنے ویژن کو بار بار کمیونیکیٹ کرتا ہے اور ری انفورس کرتا ہے۔چھٹی کوالٹی اسکے اندر خوداحتسابی اور شفاف پرنسل کنڈکٹ ہے کہ اسکے آگے پیچھے جو بھی ہورہا ہے لیکن اسکا پرسنل

کنڈکٹ شفاف ہونا چاہئے۔ساتویں کوالٹی اسکے اندر عاجزی ہے۔ عمران خان کے ساتھ مجھے کئی میٹنگز کا اتفاق ہوا ہے میں نے نوٹس کیا ہے کہ ان سے سخت سے سخت سوالات پوچھے جاتے ہیں لیکن انکے ماتھے پر بل نہیں پڑتے۔آٹھویں کوالٹی دوسروں کے جذبات اور احساسات کو سمجھنا، جب سے پاکستان میں کرونا کی وبا نے سراٹھایا ہے، آپ نے ایک چیز نوٹ کی ہوگی کہ عمران خان لاک ڈاؤن کی مخالفت کرتے ہیں اور بار بار کہتے ہیں کہ مجھے ڈھائی کروڑ، تین کروڑ غریب کا احساس ہے، اگر وہ دو یا تین دن کام نہ کریں تو انکےپاس کھانے کو کچھ نہیں ہے۔نویں کوالٹی لچک ہے، وزیراعظم عمران خان کے اندر بہت زیادہ لچک پائی جاتی ہے۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


تازہ ترین خبریں
19
پی ٹی آئی نے بلوچستان حکومت سے علیحدگی پر غور شروع کر دیا
18
وزیر اعظم ہاؤس بلا کر عمران خان مجھے کیا کہتے رہے؟ بشیر میمن کے تہلکہ خیز انکشافات
17
بجلی سستی کیے جانے کا امکان
16
نواز شریف کے 3 قریبی ساتھی کس اعلیٰ شخصیت سے ملے؟ بڑی خبر
15
عید کے بعد کیا کرنا ہے؟ حکمت عملی تیار
14
الطاف حسین نے آخری وقت میں ہندو مذہب کیوں اختیار کیا

تازہ ترین ویڈیو
23
امت مسلمہ کے ہیرو صلاح الدین ایوبی کے قول کے پیچھے چھپی سچی کہانی
27 2
یہ وہ جھوٹ ہے جوہر لڑکی ضرور بولتی ہے
2
کرونا وبا کب اور کیسے ختم ہو گی ؟ 1400 سال پہلے حضور اکرم ﷺ کی نشاندہی ، جان کر آپ پھولے نہ سمائیں گے
4 7
جھگڑالو بیوی نعمت خدا وندی مگر کیسے
3 9
کیسے لڑکیوں کو خواب دکھا کر تباہ کیا جاتا ہے ایک سچا واقعہ
52394
الطاف حسین نے آخری وقت میں ہندو مذہب کیوں اختیار کیا،کرونا سے ڈر کر یا ہندووں کی محبت میں

دلچسپ و عجیب
11
دفنانے کیلئے کئی بار قبر کھودی گئی مگر اندر ایک کالاسانپ نکلا
15 7
وہ سربراہ جسے دفنانے کیلئے کئی بار قبر کھودی گئی مگر اندر ایک کالاسانپ نکلا
9 1
کرونا وائرس کی وبا کے دوران میاں بیوی ازدواجی تعلقات قائم رکھ سکتے ہیں ؟
20 8
دریا ’’نیل‘‘ کے نیچے زیر زمین کونسا دریا بہتا ہے
Copyright © 2017 insafnews.pk All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Discaminer | Contact Us