work 1 143

مولانا فضل الرحمان تمام حدیں پار کر گئے پاکستانی خفیہ اداروں پر انتہائی سنگین الزام عائد کر دیا


کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)جمعیت علماء اسلام کے قائد اورمتحدہ مجلس عمل کے صدرمولانا فضل الرحمن نے کہاہے کہ خفیہ ادارے جاسوسی کم اور سازشی زیادہ ہیں،معیشت تباہ کردی گئی ہے،ڈالر ایک سو چونتیس کا ہونے سے سینکڑوں ارب ڈوب گئے ،عوام کا مینڈیٹ چوری کرکے حکمران بننے والے کٹھ پتلی ہیں میں ایسی حکومت کو حکومت نہیں سمجھتا سی

پیک کا معاہدہ ہوتے ہی ملک وقوم کے خلاف سازشیں شروع ہوگئیں تھیں،قران وسنت کے قانون کے لئے علما کا پارلیمنٹ میں ہونا ضروری ہےملکی ترقی کا راز صرف غسل خانوں کی صفائی تک محدود ہوگیا ہے اس حکومت کا اصل کام یہی ہے۔ان خیالات کا اظہارانہوں نے مدرسہ انوالعلوم کراچی میں سندھ بھرکے دینی مدارس کے منتظمین کے منعقدہ کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کنونشن میں صوبے بھر سے علماکرام اور طلبہ نے شرکت کی ۔ اس موقع پرجے یوآئی کے سیکریٹری جنرل مولانا عبدالغفورحیدری ، قاری محمد عثمان،مفتی عبدالحق عثمانی دیگر علما کرام نے بھی خطاب کیا۔مولانا فضل الرحمن کا کہنا تھا کہ حکومت کے ناعاقبت اندیشن اقدامات کی وجہ سے معشیت تباہ کردی گئی سینکڑوں ارب ڈوب گئے ڈالر ایک سو چونتیس کا ہوگیا، سرمایہ کاروں کا سرمایہ ڈوب گیا ہے، عوام کا مینڈیٹ چوری کرکے حکمران بننے والے کٹھ پتلی ہیں میں ایسی حکومت کو حکومت نہیں سمجھتا اسٹاک ایکسچینج میں بدترین مندی ہے، تبدیلی تبدیلی کے دعووں کی قلعی کھل گئی ہے، ملکی کی ترقی کا راز صرف غسل خانوں کی صفائی تک رہ گیا ہے ، اصل میں اس حکومت کا کام بھی یہی تھا۔ انہوں نے کہاکہ سی پیک کا معاہدہ ہوتے ہی ملک وقوم کے خلاف سازشیں شروع ہوگئیں تھی۔مولانا فضل الرحمن کا کہنا تھا کہ موجودہ حالات ماضی سے کچھ مختلف نہیں ہے،اس ماحول میں ہمیں اپنا کردار کرنا ہوگا،انگریز کے دور میں مولوی اور مدرسے کو ایسے پیش کیا گیا جیسے معاشرے کا حصہ ہی نہیں،ریاستی اداروں کا عمل میں اہم کردار ہے،آج مغرب مولوی اور مسجد کی تصویر ایک دہشتگرد کے طور پر پیش کر رہا ہے،ماضی میں ملا کی دوڑ مسجد تک کی بات کی گئی اور آج دہشتگردی سے جوڑا جارہا ہے،نائن الیون کے بعد افغانستان پر یلغار کی گئی،طالبان کو انسان نہیں سمجھا گیا،آج دنیا میں یہ بات کی جارہی ہے کہ اصل دہشتگرد امریکا ہے،مغرب

کی سوچ نہیں بدلی ہے،اب کہتے ہیں اسلام کے خلاف نہیں اسلام میں انتہا پسندی کو ختم کرنا چاہتے ہیں،ایسے ہی کہتے ہیں مدرسے کے خلاف نہیں ہے مدرسے میںشدت پسندی کو ختم کرنا چاہتے ہیں۔ مولانا فضل الرحمان نے کہاکہ ہم کسی فرقہ کے خلاف نہیں یہ ہمیں تقسیم کرنے کے لیے گروہ بناتے ہیں،خفیہ ادارے جاسوسی کم اور سازشی ادارے زیادہ ہیں اپنے آپ کو خطاں سے بالاتر سمجھنے والوں نیاتنی بڑی بڑی غلطیاں کی کہ ملک ٹوٹ گیا ،مسجد کے محراب و منبر پر کسی عام آدمی کو نہیں بیٹھنے دیتے،منبر و محراب نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی جگہ ہے،لیکن حکمرانی کے لیے یہ نہیں سوچتے۔ مولانا فضل الرحمن کا کہنا تھا کہ ملک پر ستر سال سےمسلط نظام سے علما کرام آج لاتعلق ہیں حالات کو سمجھنے ذمہ داریاں کو نبھانے کی ضرورت ہے ایوانوں میں قانون سازی قرآن سنت کے عین مطابق ضروری ہے وہاں علما ہی نہیں ہونگے تو قوانین کیسے بنیں گے،وہاں ہمارا کوئی کردار نظر نہیں آتا۔ انہوں نے کہاکہ حکومت کے ناعاقبت اندیش اقدامات کی وجہ سے سرمایہ کاروں کا سرمایہ ڈوب گیا ہے،اسٹاک ایکسچینج میں بدترین مندی ہے،تبدیلی تبدیلی کی باتیں یہ تھی تبدیلی، ملک میں مہنگائی کا طوفان آگیا ہے غریب آدمی خرید و فروخت کے لیے بازار نہیں جاسکتا۔انہوں نے کہاکہ ملکی کی ترقی کا راز صرف غسل خانوں کی صفائی تک رہ گیا ہے،اصل میں اس حکومت کا کام بھی یہی تھا۔مولانا عبدالغفورحیدری کا کہنا تھا کہ علما کرام تہتر کے آئین کی جنگ لڑرہے ہیں کسی حکومت کی غلط پالیسی کی تائید نہیں کرینگے مسائل کے حل کے لئے جدوجہد کرنا ہوگی اس موقع پر مقررین نے سندھ حکومت کی جانب سے مولانا فضل الرحمن کو سیکورٹی نہ دینے کی مذمت بھی کی ۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


تازہ ترین خبریں
5
راشد خان افغانستان میں موجود گھر والوں کی حفاظت سے متعلق پریشان
19
پی ٹی آئی نے بلوچستان حکومت سے علیحدگی پر غور شروع کر دیا
18
وزیر اعظم ہاؤس بلا کر عمران خان مجھے کیا کہتے رہے؟ بشیر میمن کے تہلکہ خیز انکشافات
17
بجلی سستی کیے جانے کا امکان
16
نواز شریف کے 3 قریبی ساتھی کس اعلیٰ شخصیت سے ملے؟ بڑی خبر
15
عید کے بعد کیا کرنا ہے؟ حکمت عملی تیار

تازہ ترین ویڈیو
23
امت مسلمہ کے ہیرو صلاح الدین ایوبی کے قول کے پیچھے چھپی سچی کہانی
27 2
یہ وہ جھوٹ ہے جوہر لڑکی ضرور بولتی ہے
2
کرونا وبا کب اور کیسے ختم ہو گی ؟ 1400 سال پہلے حضور اکرم ﷺ کی نشاندہی ، جان کر آپ پھولے نہ سمائیں گے
4 7
جھگڑالو بیوی نعمت خدا وندی مگر کیسے
3 9
کیسے لڑکیوں کو خواب دکھا کر تباہ کیا جاتا ہے ایک سچا واقعہ
52394
الطاف حسین نے آخری وقت میں ہندو مذہب کیوں اختیار کیا،کرونا سے ڈر کر یا ہندووں کی محبت میں

دلچسپ و عجیب
11
دفنانے کیلئے کئی بار قبر کھودی گئی مگر اندر ایک کالاسانپ نکلا
15 7
وہ سربراہ جسے دفنانے کیلئے کئی بار قبر کھودی گئی مگر اندر ایک کالاسانپ نکلا
9 1
کرونا وائرس کی وبا کے دوران میاں بیوی ازدواجی تعلقات قائم رکھ سکتے ہیں ؟
20 8
دریا ’’نیل‘‘ کے نیچے زیر زمین کونسا دریا بہتا ہے
Copyright © 2017 insafnews.pk All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Discaminer | Contact Us