12 4

پاکستانی قادیانی لڑکیاں اسرائیلی فوج میں کیا خدمات پیش کر رہی ہیں


اسلام آباد (ویب ڈیسک) 300پاکستانی قادیانی لڑکیاں اسرائیلی فوج میں کیا خدمات پیش کر رہی ہیں؟ انکشاف نے پاکستانیوں کو ہِلا کر رکھ دیا۔ اسرائیلی فوج میں 300خواتین سمیت 600 پاکستانی شہری خدمات سرانجام دے رہے ہیں۔ ویکلی کارپوریٹڈ کے مطابق معروف یہودی رائٹر پروفیسر آئی ٹی نومی نے اپنی کتاب

یہودی صحافی و لکھاری آئی ٹی نومی نے اپنی کتاب اسرائیل پروفائل میں انکشاف کیا ہے کہ ان 600 پاکستانیوں کا تعلق پاکستان کے قادیانی مذہب سے ہے اور ان میں 300 خواتین شامل ہیں ۔ اس بات کا بھی انکشاف ہوا ہے کہ پاکستان کے اسی قادیانی فرقہ کے لوگوں نے کرگل واقعہ کے بعد بھارتی افواج کے لیے

کروڑوں روپے کے فنڈز بھی جمع کیےکو لاکھوں روپے چندہ بھی دیا ۔یاد رہے کہ یہودیوں سے تعلق کا اعتراف قادیانیوں کے پیشوا غلام احمد قادیانی کے پوتے مرزا مبارک احمد نے بھی اپنی کتاب آور فارن مشنز میں کیا ہے۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


تازہ ترین خبریں
5
راشد خان افغانستان میں موجود گھر والوں کی حفاظت سے متعلق پریشان
19
پی ٹی آئی نے بلوچستان حکومت سے علیحدگی پر غور شروع کر دیا
18
وزیر اعظم ہاؤس بلا کر عمران خان مجھے کیا کہتے رہے؟ بشیر میمن کے تہلکہ خیز انکشافات
17
بجلی سستی کیے جانے کا امکان
16
نواز شریف کے 3 قریبی ساتھی کس اعلیٰ شخصیت سے ملے؟ بڑی خبر
15
عید کے بعد کیا کرنا ہے؟ حکمت عملی تیار

تازہ ترین ویڈیو
23
امت مسلمہ کے ہیرو صلاح الدین ایوبی کے قول کے پیچھے چھپی سچی کہانی
27 2
یہ وہ جھوٹ ہے جوہر لڑکی ضرور بولتی ہے
2
کرونا وبا کب اور کیسے ختم ہو گی ؟ 1400 سال پہلے حضور اکرم ﷺ کی نشاندہی ، جان کر آپ پھولے نہ سمائیں گے
4 7
جھگڑالو بیوی نعمت خدا وندی مگر کیسے
3 9
کیسے لڑکیوں کو خواب دکھا کر تباہ کیا جاتا ہے ایک سچا واقعہ
52394
الطاف حسین نے آخری وقت میں ہندو مذہب کیوں اختیار کیا،کرونا سے ڈر کر یا ہندووں کی محبت میں

دلچسپ و عجیب
11
دفنانے کیلئے کئی بار قبر کھودی گئی مگر اندر ایک کالاسانپ نکلا
15 7
وہ سربراہ جسے دفنانے کیلئے کئی بار قبر کھودی گئی مگر اندر ایک کالاسانپ نکلا
9 1
کرونا وائرس کی وبا کے دوران میاں بیوی ازدواجی تعلقات قائم رکھ سکتے ہیں ؟
20 8
دریا ’’نیل‘‘ کے نیچے زیر زمین کونسا دریا بہتا ہے
Copyright © 2017 insafnews.pk All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Discaminer | Contact Us