رحمان ملک جھوٹ پکڑنے والی مشین پر بیان دیں

رحمان ملک جھوٹ پکڑنے والی مشین پر بیان دیں


لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی خاتون سنتھیا رچی نے سینیٹر رحمان ملک کو جھوٹ پکڑنے والی مشین پر ٹیسٹ دینے کا چیلنج کردیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کیا رحمان ملک جھوٹ پکڑنے والی مشین پر بیان دیں گے؟ میں تو بیان دینے کیلئے تیار ہوں۔ انہوں نے ٹویٹر پر اپنے بیان میں سابق وزیر داخلہ سینیٹر رحمان ملک کو جھوٹ پکڑنے والی مشین پر بیان دینے کا چیلنج کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ کیا رحمان ملک جھوٹ پکڑنے کی مشین پرٹیسٹ دیں گے؟ میں تو تیار ہوں۔اسی طرح سنتھیارچی نے مائیکروبلاگنگ کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ایوان صدر میں سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی سے ملاقات کی تصویر بھی شیئر کی ہیں۔ جس پر سنتھیا رچی کا کہنا ہے کہ یوسف رضا گیلانی سے پہلی ملاقات ایوان صدر میں ہی ہوئی۔مید ہے تحقیقاتی ادارے ایوان صدر میں میری آمد کے ریکارڈ کا جائزہ لیں گے۔ اسی طرح امریکی خاتون سنتھیارچی نے مخدوم شہباب سے ملاقاتوں کی تصاویر بھی شیئرکی ہیں۔ دونوں تصاویر 2010ء اور2011ء میں مخدوم شہاب سے ملاقاتوں کی ہیں۔ مخدوم شہاب سے پہلی ملاقات این جی او کی سربراہ فرحانہ سواتی نے کرائی۔خیال رہے پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنماء اور سابق وزیر داخلہ رحمان ملک نے امریکی خاتون سنتھیا رچی کو50 کروڑ ہرجانے کا نوٹس بھجوا دیا ہے، سنتھیا رچی کو ہرجانے کا نوٹس بذریعہ

کوریئر بھجوایا گیا، قانونی نوٹس میں سنتھیارچی کے الزامات کی سختی سے تردید کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سنتھیارچی سے کوئی ذاتی جھگڑا نہیں وہ ایک دوست ملک کی شہری ہے۔بینظیربھٹو شہید اور میری کردارکشی کے پیچھے کون سے عناصر ہیں۔ میں وقت آنے پر بےنقاب کروں گا۔ شہید بینظیربھٹو کی تکریم کی لڑائی ہے جو پوری قوم کی قائد ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ بینظیر بھٹو شہید کیخلاف نازیبا الزامات پر بطور چیئرمین سینیٹ قائمہ کمیٹی داخلہ نوٹس لیا تھا۔ نوٹس کے ردعمل میں پر مجھ پر نازیبا، من گھڑت اور جھوٹے الزامات لگائے گئے۔بطور کمیٹی چیئرمین سخت اقدامات لینے پر میری کردار کشی شروع کی گئی۔ حکومت کیخلاف سخت بیانات پرمجھے قید اورقتل کرنے کی دھمکیاں بھی ملی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اوچھے ہتھکنڈوں سے ڈرنے والا نہیں۔ ماضی میں بھی موت کا سیل دیکھ چکا ہوں۔ دوسری جانب امریکی خاتون سنتھیارچی نے گزشتہ روز نجی ٹی وی کو انٹرویو کے دوران بتایا کہ میں پیپلزپارٹی کے رہنماؤں پر لگائے گئے الزامات پر قائم ہوں۔میں عدالت میں جاکرتحقیقات کا سامنا کرنے اور تمام الزامات کا جواب دینے کیلئے تیار ہوں، میں پاکستان میں ہی ہوں، کہیں نہیں جا رہی۔ انہوں نے کہا کہ میرے وزیرصحت شہاب الدین کے

ساتھ بہت اچھے قریبی تعلقات تھے۔ جب پیپلزپارٹی نے 2010ء میں اپنے ساتھ کام کرنے کیلئے میری مدد کی، ہراسانی کا واقعہ بھی اس وقت پیش آیا۔ شہاب الدین نے میرے کندھے پر مساج کرنے کی کوشش کی۔میرے لیے یہ غیرمتوقع تھا میں نے انہیں دور رہنے کا کہا ، یہ بات یہیں تک تھی۔ سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی نے بیان دیا کہ ان کی میرے ساتھ ملاقات ایک سفارتی تقریب میں ہوئی۔ جبکہ یہ بات سچ نہیں ہے، جب یوسف رضا گیلانی کو ان کے عہدے سے ہٹا دیا گیا تھا تو میری ان کے ساتھ ایوان صدر میں ملاقات ہوئی تھی۔ اس وقت کمرے میں کچھ امریکی اور دیگر لوگ بھی موجود تھے۔انہوں نے کہا کہ میں دس سالوں سے پاکستان آجا رہی ہوں۔ سنتھیارچی نے کہا کہ میں خاص طور پر اگر سابق وزیرداخلہ اور سابق وزیر اعظم کی بات کروں تو لاگ بکس مرتب کی جاتی ہیں، ایجنسیز آسانی سے بتا سکتی ہیں کہ ایوان صدرکون کس وقت آیا اور کس وقت گیا۔جب یوسف رضا گیلانی سے ملی اس وقت دیگر چار لوگ بھی موجود تھے۔ہم نے متعدد موضوعات پر بات کی، جب ہم رخصت ہونے لگے توانہوں نے غیرمناسب طریقے سے مجھے گلے لگایا۔۔انہوں نے کہا کہ میں پچھلے دوسال سے پی ٹی ایم کے بارے ریسرچ کررہی ہوں،اس میں مجھے خفیہ اداروں نے سپورٹ بھی کیا، مجھے پی ٹی ایم اور پیپلزپارٹی کے درمیان تانے بانے ملے ہیں۔ دوسری جانب امریکی خاتون سنتھیا رچی کے پاسپورٹ کی نقل اورپاکستان آنے کا سفری ریکارڈ منظر عام پر آگیا۔ سرکاری ذرائع کے مطابق سنتھیا رچی دو

View image on Twitter

مختلف پاسپورٹس پر 52 دفعہ پاکستانیں آئیں۔ذرائع کے مطابق سنتھیا رچی کا پہلا پاسپورٹ 9 دسمبر 2008 کو جاری ہوا جب کہ امریکی حکام نے سنتھیا رچی کا آخری پاسپورٹ 18 جولائی 2018 کو جاری کیا۔ذرائع کے مطابق سنتھیا رچی پاکستان میں پہلی بار 9 نومبر 2009 کو آئیں، صرف 3 دن قیام کے بعد 12 نومبر کو کراچی سے ہی واپس روانہ ہوگئیں۔سنتھیا رچی کے پاسپورٹ پر موجود معلومات کے مطابق پاسپورٹ کے مطابق سنتھیا رچی امریکی ریاست لوئیزیانہ میں 22 اپریل 1976 کو پیدا ہوئیں۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


تازہ ترین خبریں
پولیس اسٹیشن پر خودکش بمبار نے خود کو دھماکے سے اُڑا لیا
چین نے پی ٹی آئی حکومت پر عدم اعتماد کا اظہار کر دیا
40 سال سے کم عمر مرد و خواتین کوویکسین لگانے سے روک دیا گیا
سینیٹ کی گاڑیوں کا غیرقانونی استعمال کا انکشاف
ایسا اعزاز جو عمران خان کے پاس بھی نہیں
عید الفطر کی تاریخ کا باضابطہ اعلان

تازہ ترین ویڈیو
امت مسلمہ کے ہیرو صلاح الدین ایوبی کے قول کے پیچھے چھپی سچی کہانی
یہ وہ جھوٹ ہے جوہر لڑکی ضرور بولتی ہے
کرونا وبا کب اور کیسے ختم ہو گی ؟ 1400 سال پہلے حضور اکرم ﷺ کی نشاندہی ، جان کر آپ پھولے نہ سمائیں گے
جھگڑالو بیوی نعمت خدا وندی مگر کیسے
کیسے لڑکیوں کو خواب دکھا کر تباہ کیا جاتا ہے ایک سچا واقعہ
الطاف حسین نے آخری وقت میں ہندو مذہب کیوں اختیار کیا،کرونا سے ڈر کر یا ہندووں کی محبت میں

دلچسپ و عجیب
وہ سربراہ جسے دفنانے کیلئے کئی بار قبر کھودی گئی مگر اندر ایک کالاسانپ نکلا
کرونا وائرس کی وبا کے دوران میاں بیوی ازدواجی تعلقات قائم رکھ سکتے ہیں ؟
دریا ’’نیل‘‘ کے نیچے زیر زمین کونسا دریا بہتا ہے
(adsbygoogle = window.adsbygoogle || []).push({});
Copyright © 2017 insafnews.pk All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Discaminer | Contact Us